Dupatta Heart Touching Motivational Islamic informative Article By Mehwish Siddique

Dupatta Heart Touching Motivational Islamic informative Article By Mehwish Siddique

دوپٹہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ

کیسے ہیں آپ سب؟امید کرتی ہوں بخیر و عافیت سے ہوں گے۔”سیکھنے کا سفر” سلسلے کو آگے بڑھاتے آج میں آپکے سامنے ایک اور اہم موضوع پر بات کرنے آئی ہوں۔

تقریبات تو انسان کی زندگی کا اہم حصہ ہیں۔شادی،سالگرہ،منگنی،مہندی سمیت دیگر تقریبات۔آئے روز ہمیں کسی نہ کسی تقریب میں شرکت کرنا ہی ہوتا ہے۔خواہ دل چاہے یا پھر نہ چاہے۔اس دوران جو لڑکیاں حجاب نہیں لیتیں ان کا تو الگ ہی حساب ہے۔

غور طلب بات یہ ہے جو لڑکیاں شرم و حیا کے باعث عام دنوں میں تو اپنے بھائیوں اور باپ کے سامنے ہمیشہ سر پر دوپٹہ اوڑھے رکھتی ہے لیکن تقریبات کے دوران انہوں نے اپنے دوپٹے کو شانے پر رکھا ہوتا ہے یا پھر گلے میں برائے نام لٹکایا ہوتا ہے۔

کیا وہ اپنا ہئیر اسٹائل دکھانے کی خاطر یہ سب کرتی ہیں جو انہوں نے کسی مہنگے ترین پارلر سے بنوایا ہوتا ہے؟

کیا اس دوران انکی شرم و حیا کرائے پر گئی ہوتی ہے؟کچھ لڑکیاں آگے سے یہ کہہ کر خاموش کروانے کی کوشش کرتی ہے بھئی یہ سائیڈ زنانہ ہے۔۔اس لئے دوپٹہ ایسے رکھا ہے۔۔

معذرت کے ساتھ ہر تقریب میں ویٹر کھانا سرو کرتے ہیں۔۔وہ بھی غیر محرم۔۔ہر آتا جاتا آپ کو دیکھ رہا ہوتا ہے۔ نگاہیں نیچی رکھنے کا حکم صرف مردوں پر ہی نہیں عورتوں پر بھی لاگو ہوتا ہے۔

قیامت کے دن اپنے حساب کو آسان بنانے کیلئے ان چھوٹی چھوٹی باتوں کا خیال لازمی رکھیں۔

“جنت چاہت اور خواہش سے نہیں بلکہ خلوص دل سے کیے گئے نیک عمل سے ملتی ہے۔”

اقتباس ماخوذ

ناول:محبت سے خدا تک کا سفر

ازقلم:مہوش صدیق

اگر آپ میں سے کوئی ایک بھی اس پر عمل کرے گا تو میرے لیے صدقہ جاریہ ہو گا۔

اس پوسٹ کو جتنا ہو سکے پھیلانے کی کوشش کریں۔

اللہ تعالٰی مجھ سمیت تمام امت مسلمہ کو ہدایت کے راستے پر گامزن کرے آمین ثم آمین یا رب العالمین۔

جزاک اللہ خیرا۔

#مہوش_صدیق #

محبت_سے_خدا_تک_کا_سفر

#seekhnekasafar

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Verified by MonsterInsights